زندگی کے ٤٥ برس

زندگی کے ٤٥ برس کے شروع ہوتے ہی بیماریوں نے حملہ آور ہونا شروع کر دیا ہے۔ابھی چند دن پہلے طبعیت خراب ہوجانے کے سبب ڈاکٹر صاحب نے ہائی بلڈ پریشر تشخیص کیا ہے اور تمام ٹیسٹ رپورٹیں پڑحنے کے بعد میرے ان تمام کھابوں پر بھی پابندی عائد کر دی ہے جو میں کبھی کبھار کسی پارٹی یا تقریب میں خوش قسمتی سے کھا لیا کرتا تھا۔
ایک تو مہنگی دوائیاں اور دوسرا پرہیزی غذا کھانے کی وجہ سے کچھ بھی کرنے کو دل نہیں چاہتا۔اور تو اور ڈاکٹر صاحب نے سگریٹ پینے پر بھی پابندی عائد کر دی ہے۔بلڈ پریشر ہےکہ کم ہونے کو نہیں آرہا۔اخبار ، ٹی وی ، رسالے سب بند ہیں تاکہ کہیں میری نظر کسی ایسی خبر پر نہ پڑ جائے جس کی وجہ سے لینے کے دینے پڑ جائیں۔بس ایک انٹر نیٹ کا سہارا ہے مگر وہ بھی بنا سگریٹ کے بد صورت سا لگ رہا ہے۔

About

2 thoughts on “زندگی کے ٤٥ برس

  1. Hypocrisy Thy Name Says:
    May 2nd, 2006 at 4:59 pm e
    اللہ آپ کو جلد مکمل شفاء عطا کرے ۔ خبر تو بُری ہے ليکن اسے اچھا بنانا آپ کے ہاتھ ميں ہے ۔ ميں آپ کو سادہ طريقہ بتاتا ہوں ۔ آپ اس کے متعلق پريشان بالکل نہ ہوں ۔ مگر پرہيز کريں ۔ چوبيس گھينٹے ميں کم از کم تين لٹر سادہ پانی پئيں ۔ لہسن کا استعمال زيادہ کريں ۔ سبز پتی کا قہوہ جسے چائينيز ٹی کہتے ہيں دن ميں چودا کپ پئيں مگر بغير چينی يا سوِيٹ نر کے ۔ قہوہ بنانے کيلئے پتی کو نہ اُباليں بلکہ تھوڑی سی پتی کپ ميں ڈالکر پانی اُبال کر اُس پر ڈال ديں ۔ چودا کپ کيلئے پتی تھرموس ميں ڈالکر چودا کپ اُبلا ہوا پانی اُس ميں ڈالکر رکھ ديں اور سارا دن پيتے رہيں ۔ کھيرے اور ککڑی کھايا کريں ۔ مصالحوں والے اور تيز مرچ والے کھانے نہ کھائيں ۔ گائے کا گوشت بالکل نہ کھائيں ہو سکے تو بکرے کا بھی نہ کھائيں ۔ مرغی اور مچھلی کھائيں ۔ سبزياں خوب کھائيں ۔ داليں کھا سکتے ہيں ۔ پھل کھائيں ۔

  2. آپ کا بہت شکریہ جو آپ نے مجھے پوچھا۔مجھے دلی خوشی ہوئی ہے۔انشااللہ کوشش کروں گا کہ آپکی دی ہوئی ہدائت پر عمل ممکن ہو سکے۔لاہوری بچہ ہوں اس لئے کھابوں کے بغیر رہنا مشکل ہے۔بس دعا کریں۔
    شکریہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *